Blog Archives

اٹک کی ٹھنڈک

رات جب تراویح کے بعد میں اسکو رخصت کرنے لگا ،تو اس نے اپنے گھر کی طرف دیکھ کر کہا کہ آج پھر ہماری بجلی خراب ہے،چونکہ رات کافی دیر ہوچکی تھی ،اور علاقہ بھی خاموشی کے سبب ڈراونا منظر پیش کر رہا تھا، اسلئےمیں اسکی بات کو بے توجہی سے سُن کر  اپنے گھر چلا گیا۔ Read the rest of this entry

یاران بطرف ناران

سُنا تو ہم نے کئی لوگوں سے تھا لیکن جیسا کہ عربی مقولہ ہے کہ  (لیس الخبر کالمعاینہ) یعنی خبر معاینہ کا قائم مقام نہیں ہوسکتا ،اسی لئے ہم بھی اسکی صحیح خوبصورتی کا ادراک نہ کرسکے۔

لیکن اس موسم گرما میں ساتھیوں نے پروگرام بنایا کہ کیوں نا ہم بھی اسکی خوبصورتی کے عینی شاہدین بن جائیں،اس لئے اس جانب سفر کا پروگرام بنایا۔

چنانچہ ایک ساتھ ساتھی کی گاڑی میں جانے کی ترتیب بنائی تو اچانک اسکی طرف سے اطلاع ملی کہ جناب آج سہ پہر تین بجے اسکی خوبصورتی دیکھنے کیلئے نکلنا ہے۔ Read the rest of this entry

ژالہ باری کا منظر

پشاور میں چند دن قبل شدید ژالہ باری ہوئی۔ جس کے سبب موسم ایک بار پھر ٹھنڈا ہوگیا اور گرمی کا زور ٹوٹ گیا۔ ہمارئے علاقے میں جو ژالہ باری ہوئی تو وہ بھی زیادہ تھی لیکن ہم سے دو کلو میٹر کے فاصلے پر جو ژالہ باری ہوئی تو نا ممکن حد تک زیادہ ہوئی،لوگ تماشہ دیکھنے گئے تھے،کہ سڑکوں پر اولے پڑئے ہوئے تھے۔ ایک مسجد کی سٹیل چادروں والی چھت ژالہ باری کا بوجھ برداشت نہ کر سکی اور زمین بوس ہوگئی۔ اسی طرح ایک یونیورسٹی کے پارکنگ میں لگے شیٹس بھی اولوں کا بوجھ برداشت نہ کرسکتے ہوئے زمین پر آگرئے۔

ژالہ باری کے دوران ایک بڑا مسئلہ گاڑی کو بچانا ہے، کیونکہ میں نے چند ایک گاڑیاں دیکھی ہیں کہ جن کی باڈی ژالہ باری کے سبب خراب ہوگئیں ہیں Read the rest of this entry

بھوت انکل اور بند دروازے

ذرا تصور کیجئے کیا ہی عجیب وقت ہوگا جب آپ گاڑی کے اندر محصورہوں اور کسی خرابی کی وجہ سے گاڑی کے دروازوں کے لاک کھلنے سے انکاری ہوں۔اسی اثنا میں کسی غیرمری مخلوق(بھوت انکل) کی موجودگی کا ہلکا سا احساس ہو، Read the rest of this entry

%d bloggers like this: